بورڈ آف ڈائریکٹرز

سینٹرل ڈپازیٹری کمپنی آف پاکستان لمیٹڈ (سی ڈی سی) پاکستان میں واحد ڈپازیٹری ہے

عابد علی حبیب

ڈائریکٹر

عابد علی حبیب

جناب عابد علی حبیب پاکستان اسٹاک ایکسچینج لمیٹڈ کے بورڈ میں شیئرہولڈر ڈائریکٹر ہیں۔ آپ پی ایس ایکس کی ٹریڈنگ اینڈ کمرشل افیئرز کمیٹی کے چیئرمین ہیں۔ آپ پی ایس ایکس بورڈ کی ہیومن ریسورسز اینڈ ریمیونیریشن، لسٹنگ اینڈ والینٹری ڈی لسٹنگ، آڈٹ، اور مارکیٹ ڈیویلپمنٹ اینڈ نیو پراڈکٹس کمیٹیز کے بھی رکن ہیں۔ لسٹنگ کمیٹی کے رکن کی حیثیت سے، آپ مختلف معروف کمپنیوں کی لسٹنگ درخواستوں اور کوائف نامہ کی منظوری میں بنیادی کردار ادا کرتے ہیں۔

اس سے قبل آپ عابد علی حبیب سیکیورٹیز (پرائیویٹ) لمیٹڈ کے چیئرمین اور چیف ایگزیکٹیو، اس کے علاوہ ابا علی حبیب سیکیورٹیز (پرائیویٹ) لمیٹڈ کے ڈائریکٹر کی حیثیت سے اپنے فرائض انجام دے چکے ہیں۔

آپ 1995 سے 2015 کے درمیان مختلف میعادوں کے لیے اسٹاک ایکسچینج کے بورڈ میں خدمات انجام دے چکے ہیں۔ ان میعادوں کے دوران، آپ بورڈ کی جانب سے تشکیل شدہ مختلف کمیٹیوں کا، بطور چیئرمین یا رکن، حصہ رہے۔ آپ نے انٹرنیٹ پر مبنی آرڈر روٹنگ سسٹم کی تصور سازی، منصوبہ بندی اور ڈیزائن میں مرکزی کردار ادا کیا اور اس کے علاوہ کراچی آٹومیٹڈ ٹریڈنگ سسٹم کی بھی نگرانی، نفاذ اور معائنہ کیا۔

سال 2006، 2005 اور 2010 کے دوران ، KSE کی ڈی میوچوئلائزیشن کمیٹی کے رکن کے طور پر، جناب حبیب صاحب موجودہ نمونوں اور بین الاقوامی طریقۂ کار کے مطابق KSEکی تجویز کردہ ڈی میوچوئلائزیشن پر ابتدائی رپورٹ کی تیاری، اس حوالے سے مختلف مسائل اور سفارشات کی نشاندہی میں مرکزی کردار کے حامل رہے۔ نتیجتاً، 2012 میں کارپوریٹائزیشن اور ڈی میوچوئلائزیشن کے مقاصد کی تکمیل کرلی گئی۔ آپ پی ایس ایکس کی لسٹنگ کے عمل میں بھی فعال انداز میں شریک تھے اور بُک بلڈنگ کے ذریعے پی ایس ایکس کے اجرائے حصص برائے فروخت کے کنسلٹنٹ کی جانب سے منعقدہ روڈ شوز میں بنیادی کردار ادا کیا۔

جناب حبیب صاحب سال 2010 اور 2011 میں کے ایس ای کی کمپنیز افیئرز/ کارپوریٹ گورننس کمیٹی کے چیئرمین کے عہدے پر فائز رہے۔ اس مدت کے دوران، بے شمار اقدامات کا آغاز اور ان کی تکمیل کی گئی، جس سے ایکسچینج کی مجموعی ریگولیٹری فضا پر مثبت اثرات مرتب ہوئے۔ چند اہم کامیابیوں میں شامل ہیں (i) لسٹنگ کے قواعد و ضوابط میں مختلف ترامیم؛ (ii) لسٹنگ کے قواعد و ضوابط کی خلاف ورزی کرتے ہوئے غیرفعال/ عدم کارکردگی کی حامل کمپنیوں کے خلاف کارروائی؛ (iii) سالانہ لسٹنگ فیس پر نظرِثانی؛ (iv) مارکیٹ میں لسٹڈ کمپنیز/سیکیورٹیز سے متعلقہ گردش کرتی افواہوں کی تصدیق کا طریقۂ کار؛ (v) نظرِ ثانی شدہ کوڈ آف کارپوریٹ گورننس کے نفاذ؛ (vi) کسی ڈائریکٹر ، سی ای او یا ایگزیکٹیو یا ان کے شریکِ حیات کی جانب سے سیکیورٹیز کی فروخت/خرید سے متعلقہ معلومات کے مارکیٹ پارٹیسپنٹس /سرمایہ کاروں پر افشاء کے لیے احتیاطی تدابیر؛ اور (vii) صفِ اول کی کمپنیوں کے انتخاب کے لیے اصولِ معیار پر نظرِ ثانی۔