مینجمنٹ پروفائلز

محمد جنید شیخھا

سی ای او –آئی ٹی ماینڈز

جناب محمدانور گوپلانی

ہیڈ آف ہیومن ریسورسس

عتیق الرحمٰن

ہیڈ آف دی ٹرسٹی اینڈ کسٹوڈیل سروسز یونٹ 1

شارق جعفرانی

ہیڈ آف پرڈکٹ ڈیولپمنٹ ایڈ مارکٹنگ

آفتاب احمد دیوان

چیف ایگزیکیٹیو آفیسر

فاروق حسین

ہیڈ آف ایڈمنسٹریشن

شارق نسیم

ہیڈ آف پرڈکٹ ڈیولپمنٹ ایڈ مارکٹنگ

سید آصف شاہ

چیف انفارمیشن آفیسر

بدرالدین اکبر

چیف کومپلائنس اینڈ رسک آفیسر

عبدلصمد

ہیڈ آف دی ٹرسٹی اینڈ کسٹوڈیل سروسز یونٹ اا اینڈ شئیر رجسٹرار سروسز

حماد علی فیصل

چیف انٹرنل آڈیٹر

First Row (L-R): Aftab Ahmed Diwan, Syed Asif Shah, Abdul Samad.
Second Row (L-R): Atiqur Rehman, Badiuddin Akbar, Anwar Gopalani.
Third Row (L-R): M. Shariq Naseem, Shariq Jafrani, Farooq Hussain.
Fourth Row (L-R): Junaid Shekha, Hammad Ali Faisal.

X

محمد جنید شیخھا

سی ای او –آئی ٹی مائینڈز

محمد جنید شیخھا نے 2006ء میں سینٹرل ڈیپازٹری کمپنی آف پاکستان لمیٹڈ کے انٹرنل آڈٹ ڈپارٹمنٹ میں شمولیت اختیار کی اور بعد میں جولائی 2011 میں چیف انٹرنل آڈیٹر کا منصب سنبھالنے سے پہلے پروڈکٹ ڈیولپمنٹ اور آپریشن کے شعبے میں کام کیا۔اس کے علاوہ، آپ نے سی ڈی سی کی سی ایس آر کمیٹی میں اور متبادل بزنس کنٹینیویٹی منیجر کے طور پربھی خدمات انجام دیں ہیں ۔

آپ یکم جولائی2014 ء سے آئی ٹی مائینڈز لمیٹڈکے سی ای او کے منصب پر فائز ہیں ۔ جناب شیخھا ،انسٹیٹیوٹ آف چارٹرڈ اکاونٹنٹس آف پاکستان اور انسٹیٹیوٹ آف کوسٹ اینڈ مینجمنٹ اکاؤنٹیٹس آف پاکستان کے ساتھی رکن ہیں۔آپ انسٹیٹیوٹ آف انٹرنل آڈیٹرز ،یو ایس اے کے سند یافتہ بھی ہیں۔

آپ نے اپنی پیشہ وارانہ زندگی کا آغازکراچی میں پرائس واٹرہاؤس کوپرز کے ساتھ ٹرینی(زیرِ تربیت) چارٹرڈ اکاونٹنٹ کی حیثیت سے کیا ۔اور بعد میں ارنسٹ اینڈ ینگ کے ساتھ وابستہ ہو کر اس کےکراچی اور لندن کے دونوں دفاتر میں کام کرنے لگے۔ آپ کمیونٹی کی خدمات سے بھی وابستہ ہیں اور اس وقت انسٹیٹیوٹ آف چارٹرڈ اکاؤنٹنٹس آف پاکستان (آئی سی اے پی)کی جنوبی علاقائی کمیٹی کے منتخب رکن کے طور پر کام کر رہے ہیں ۔

محمدانور گوپلانی

ہیڈ آف ہیومن ریسورسس

جناب محمدانور گوپلانی، بیس سال سے زائد کے عرصے سے ہیومن ریسورس کے شعبے سے منسلک ہیں ۔وہ بہت سی بڑی ملٹی نیشنل اور نیشنل کمپنیز کے ساتھ کام کر چکے ہیں جن میں ، فلپس الیکٹرک انڈسٹریز ، مرک شارپ اینڈ دہوم اور سوئی سدرن گیس کمپنی شامل ہیں۔

آپ نے پاکستان سوسائٹی فار ٹریننگ اینڈڈیولپمنٹ کے بورڈ آف گورنر پر اور پاکستان پٹرولیم انسٹیٹیوٹ آف پاکستان کی ممبر اسکالر کشپ کمیٹی کے لئےبھی خدمات انجام دیں اور آپ آسٹریلین ہیومن ریسورس انسٹیٹوٹ کے سند یافتہ پیشہ ور ہیں ۔

آپ نے قانون میں بیچلر کی ڈگری، ایس ایم لا ءکالج سےاورپولٹیکل سائنس ( علمِ سیاسیات ) میں ماسٹرزکی ڈگری کراچی یونیورسٹی سے بالترتیب 1987 اور 1989 میں حاصل کی ۔آپ نے نیشنل انسٹیٹیوٹ آف لیبر ایڈمنسٹریشن اینڈ ٹریننگ سے ” لیبر ایڈمنسٹریشن اینڈ انڈسٹریل ویلفیر ” میں پوسٹ گریجویٹ ڈپلومہ بھی حاصل کیا ۔آپ نے ، بی اینڈ ڈبلیو ، یو ایس اے ، سے ” ٹرینر فار لیڈر شپ ” کی تربیت بھی حاصل کی اور آپ سی اے پی ٹی ، یو ایس اے کےایک تسلیم شدہ ایم بی ٹی آئی پریکٹشنر بھی ہیں۔

اس وقت وہ 2008 سے سینٹرل ڈپازٹری کمپنی آف پاکستان لمیٹڈ کے ہیومن ریسورسز ڈپارٹمنٹ کی قیادت کر رہے ہیں ۔

عتیق الرحمٰن

ہیڈ آف دی ٹرسٹی اینڈ کسٹوڈیل سروسز یونٹ 1

جناب عتیق الرحمٰن صاحب نے مارچ 1997میں سی ڈی سی کےآپریشنز ڈیپارٹمنٹ میں شمولیت اختیار کی اور سینٹرل ڈیپازٹری سسٹم اور نیشنل کلیئرنگ اینڈ سیٹلمنٹ سسٹم پر کامیابی سے عمل درآمد میں ایک اہم کردار ادا کیا۔

اس کے بعد انہوں نے 2004 میں پروڈکٹ ڈیولپمنٹ اور یو اے ٹی کی قیادت کی اور سینٹرل ڈیپازٹری سسٹم کو ری انجینیر (کی کارکردگی کو موئثر بنایا )کیا ۔2005 میں انہوں نے ایپلیکیشن ڈیولپمنٹ شعبہ کی قیادت کی جہاں انہوں نے سی ڈی سی ایکسس آئی وی آر اور ویب، یونیک آئیڈینٹیفیکیشن (انفرادی شناختی ) نمبر اورسی ڈی ایس اور این سی ایس ایس کے دیگر بہت سارے موڈیول کے نفاذ کی نگرانی کی۔ 2006 سے وہ ٹرسٹی اور کسٹوڈین سروس یونٹ 1 کے سربراہ کے طور پر کام کر رہے ہیں۔

آپ نے کراچی یونیورسٹی سے بیچلر آف کامرس کی سند حاصل کی ۔اور آپ چارٹرڈ اکا ؤنٹینسی فائنلسٹ اور آئی سی ایم اے کے تعلیم یافتہ پیشہ ور ہیں ۔

شارق جعفرانی

ہیڈ آف پرڈکٹ ڈیولپمنٹ ایڈ مارکٹنگ

جناب شارق جعفرانی انسٹیٹیوٹ آف چارٹرڈ اکاؤنٹنٹس پاکستان کے ایک رکن ہیں اورانسٹیٹیوٹ آف چارٹرڈ اکاونٹنٹس آف انگلینڈ اور ویلز کے ساتھ پرفیشنل اسٹیج کے لیے رجسٹرڈ ہیں.اس کے علاوہ انہوں نے اکنامکس میں ماسٹر ڈگری اور کمپیوٹر سائنس میں پوسٹ گریجویٹ ڈپلوما ،(پی جی ڈی )کراچی یونیورسٹی سے حاصل کی ہیں۔

جناب جعفرانی نے اپنے پیشہ وارانہ زندگی کا آغاز ارنسٹ اینڈ ینگ چارٹرڈ اکاونٹنٹس میں ایک ٹرینی کی حیثیت سے کیا جہاں سے آپ نے اپنی چارٹرڈ اکاونٹینسی کی لازمی تربیت کی مدت مکمل کی اور بعد میں سپر وائزر (نگران) کی حیثیت سے خدمات انجام دیں ۔اپنے ای اینڈ وائی میں قیام کے دوران ، آپ ای ایند وائی کے مختلف مراکز پر تعینات رہے جن میں لندن، ایڈنبرا، گلاسگو، کیپ ٹاؤن اور جوہانسبرگ کے دفاتر شامل ہیں۔

جناب جعفرانی نے سال 2008 میں سی دی سی کے کمپنی سیکریٹیریٹ میں شمولیت اختیار کی اور بعد میں ،سینیئر مینجر بجٹنگ اور پلاننگ کی ذمہ داری سنبھالنے سے پہلے پروڈکٹ ڈیولپمنٹ کی بھی خدمات انجام دیں ۔جناب جعفرانی نے آئی ٹی مائینڈز کے کمپنی سیکریٹری اور سی ایف او کی حیثیت سے بھی خدمات انجام دیں۔

سی ڈی سی کے سی ایف او اور کمپنی سیکریٹری کی ذمہ داریاں سنبھالنے سے پہلے آپنے چیف انٹرنل آڈیٹر کی حیثیت سے بھی کام کیا۔

آفتاب احمد دیوان

چیف ایگزیکیٹیو آفیسر

آفتاب احمد دیوان نے 1981 میں اپنی پیشہ وارانہ زندگی کا آغاز سٹی بینک سے کیا ۔ آپ بینک کے ساتھ اپنی طویل ر فاقت کے دوران مختلف عملی اور کاروباری معمالات دیکھتے رہے بشمول آف شور ذمہ داریاں۔

آپ نے مقامی طور پر جن شعبوں میں خدمات انجام دیں ان میں مالیاتی کنٹرول، کریڈٹ اور دنیا بھر کی سیکیوریٹیز خدمات (سروسز)شامل ہیں ۔مقامی منصوبوں کے علاوہ انہوں نے سٹی بینک ، رو مانیہ میں بطور سیکیوریٹیز بزنس مینیجر کے کاروباری اور آپریشنل معملات اور سٹی بینک برطانیہ میں پروجیکٹ کو ۔کوآرڈینیٹر کی حیثیت سے سیکیوریٹیز سے متعلق کیش ایکسپشن پروجیکٹ کے معملات کی نگرانی کی۔

اسکے بعد 1999 میں آپ سی ڈی سی میں ہیڈ آف آپریشنز کی حیثیت سے منسلک ہوئے اور 2004 سے بطور چیف آپریٹنگ آفیسر کے خدمات انجام دے رہے ہیں ۔

انہوں نے متعدد بین القوامی فورمز میں سی ڈی سی کی نمائندگی کی جن میں ایسوسی ایشن آف نیشنل نمبرنگ ایجنسیز(اے این این اے) اور ایشیا پیسیفک سینٹرل سیکیوریٹیز ڈپا زٹیز گروپ ( اے سی جی) شامل ہیں ۔ آپ نے ، مئی 2009 سے ستمبر 2010 تک، سیکیوریٹیز اینڈ ایکس چینچ کمیشن آف پاکستان کے قائم کردہ کیپٹل مارکیٹس کے مشاورتی (کنسلٹیٹیو) گروپ میں خدمات بھی انجام دیں ۔

فاروق حسین

ہیڈ آف ایڈمنسٹریشن

فاروق حسین، سینٹرل ڈپازٹری کمپنی آف پاکستان لمیٹڈ کی انتظامیہ کے سر براہ ہیں۔1995 ء میں انہوں نے سی ڈی سی میں انتظامیہ کے افسر کے طور پر شمولیت اختیار کی اورکمپنی کی انتظامی پالیسیوں کی ترویج اور نفاذ پر عملدرآمد کرانے میں ایک فعال کردار ادا کیا۔ 2000 میں آپ کا تقرر سی ڈی سی کے انتظامیہ کے سربراہ کی حیثیت سے ہوا جہاں آپ کی بنیادی ذمہ داریوں میں، پاکستان بھر میں سی ڈی سی کی تمام شاخوں میں جسمانی تحفظ (فزیکل سیکیوریٹی) اور نیٹ ورک کی نگرانی شامل ہیں ۔ آپ کمپنی کے ہیڈ آفس ،سی ڈی سی ہاؤس ، شاہرا ہ فیصل کی تعمیر ،تزئین و آرائش میں پیش پیش رہے ۔ آپ سیکورٹی پروفیشنلز فورم کے ایک رکن ہیں آپ نے قانون میں کراچی یونیورسٹی سے بیچلر ڈگری حاصل کی اور سندھ اور کراچی بار کونسل کےایک رکن بھی ہیں۔

شارق نسیم

ہیڈ آف پرڈکٹ ڈیولپمنٹ ایڈ مارکٹنگ

جناب شارق نسیم نے ہمدرد یونیورسٹی سے 1997 اور8 199میں بالترتیب بیچلرز ان بزنس ایڈمنسٹریشن( آنرز) اور ماسٹرز آف بزنس ایڈمنسٹریشن(میجرز ان مارکیٹنگ) کیا ۔ آپ نے ڈن اینڈ براڈ اسٹریٹ امریکہ کی مقامی فرنچائز میں خدمات انجام دیں، بعد میں پاکستان میں صارفین اور کارپوریٹ کریڈٹ بیورو کے قیام کےلئے،وی آئی ایس گروپ ( پیرنٹ کمپنی آف جے سی آرـوی آئی ایس کریڈٹ ریٹنگ کمپنی ) میں شمولیت اختیار کی ۔

2001میں انہوں نے سینٹرل ڈیپازٹری کمپنی کے آپریشنز ڈیپارٹمنٹ (شعبہ) میں شمولیت اختیار کی اور اس ٹیم کے بنیادی رکن کے طور پر خدمات انجام دیں جس نےنیشنل کلیئرنگ اینڈ سیٹلمنٹ سسٹم کا کامیابی آغاز کیا۔ بعدمیں آپ نے پروڈکٹ ڈیولپمنٹ ڈپارٹمنٹ کے شعبے میں، مختلف اہم منصوبوں کے اجراء میں ایک اہم کردار ادا کیا ، جن میں آٹو میشن آف سیکیوریٹیز موومنٹ ، انویسٹمنٹ پورٹ فولیو سروسز( آئی پی ایس) ، ڈائریکٹ سیٹلمنٹ میکینزم ( ڈی ایس ایم) انشورنس کی انڈسٹری کے لئے سینٹرالائزڈ انفارمیشن شیئرنگ سلوشن۔(سی آئی ایس ایس 2)۔

آپ نے کئی بین القوامی فورمز جن میں ایشیا پیسفک سینٹرل ڈپازٹری گروپ (اے سی جی ) ، ورلڈ فورم آف سی ایس ڈیز وغیرہ شامل ہیں ،سی ڈی سی کی نمائندگی کی ۔آج کل آپ پروڈکٹ ڈیولپمنٹ اور مارکٹنگ ڈپارٹمنٹ جس میں اے سی جی سیکریٹیریٹ بھی شامل ہے کی قیادت کر رہے ہیں ۔

2013سے آپ سی ڈی سی کے مارکیٹنگ کے شعبے کی قیادت کرتے ہوئے اس میں اہم کردار ادا کر رہے ہیں جس میں کیپٹل مارکیٹ کے علاوہ بھی دیگر مارکیٹس کے لیے نئی پروڈکٹس اور خدمات پیش کرنا شامل ہے۔

آپ 2013 سے اب تک ملک بھر میں سرمایہ کاروں کی آگاہی کےسیمیناروں کے ایک وسیع سلسلے کی قیادت بھی کر رہے ہیں۔

سید آصف شاہ

چیف انفارمیشن آفیسر

سید آصف شاہ مالیاتی صنعت کے شعبوں میں اپلیکیشن ڈیولپمنٹ اور آئی ٹی آپریشنزمیں متعد د حیثیتوں سے خدمات سر انجام دے چکے ہیں ۔ان کی قیادت میں سی ڈی سی نے اپنی ، ڈیپوزیٹوری ، ٹرسٹی اینڈ کسٹوڈیل ، شئیر رجسٹرار ، میوچل فنڈز بیک آفس اکاونٹنگ ، اور نیشنل کلیئرنگ کمپنی کی سیٹلمینٹ اور کلیئرنگ کی سروسز کے لیے آئی ٹی سلوشنز کا کامیاب نفاذ کیا ۔

آپ کی قیادت میں سی دی سی نے اپنے انفارمیشن سیکیوریٹی اور بزنس کنٹینیوٹی مینیجمینٹ پروگرام کے لیے آئی ایس او27001 اور بی ایس 2599 سرٹیفیکیٹ حاصل کیے۔ سی ڈی سی کے ذیلی ادارہ آئی ٹی ماینڈز قائم کرنے میں آپ بہت مددگار ثابت ہوئے ۔آپ کی وجہ سے ہی پاکستان ، مشرق وسطیٰ اور افریقہ میں بہت سی کامیاب کاروباری مصروفیات(انگیج مینٹز) عمل میں آئیں ۔ سال 2013 میں پاکستان لائف انشورنس انڈسٹری کے لیے کئے جانے والے ایسے ہی ایک نفاذ کو ” پاشا” نے بہترین فنانشل اپلیکیشن کا ایوارڈ دیا

آپ نے 1994 میں کراچی یونیورسٹی سے کمپیوٹر سائنس کے شعبے میں اپنی ماسٹرڈگری پوزیشن ہولڈر کی حیثیت سے حاصل کی ۔

بدرالدین اکبر

چیف کومپلائنس اینڈ رسک آفیسر

جناب اکبر کو 18 سال کا اعلیٰ عہدوں پر کام کرنے کا متنوع تجربہ حاصل ہے اور وہ مالیات اور آپریشنز کے شعبوں میں بطو رچیف فائننشل آفیسر، کمپنی سیکریٹری اور چیف آپریٹنگ آفیسر ، پاکستان کے متعدد کونگلومیریٹس (معروف کمپنیوں کے گروپس )؛ مثلاً دیوان مشتاق گروپ، اورین گروپ اور نیشنل کلیرنگ کمپنی آف پاکستان لمیٹڈ میں کام کر چکے ہیں۔

1998سے 2001کے دوران ، انہوں نے سی ڈی سی کے لیگل اینڈ کمپلائنس اور آپریشنز کے شعبوں میں بھی اپنی خدمات انجام دیں ۔جون 2015 میں سی ڈی سی میں بطورچیف کمپلائنس اینڈ رسک آفیسر دوبارہ شمولیت سے پہلے آپ ٹورونٹو میں معروف پیکیجنگ گروپ ، اے ایس جی شوروڈ پیکجنگ انٹرنیشنل پیپرز میں بطور سینئر فنانشل اینڈ رپورٹنگ انالسٹ خدمات انجام دے رہے تھے

جناب اکبر کیپیٹل مارکیٹ کے کلیئرنگ اینڈ سیٹلمنٹ، رسک مینجمنٹ، آپریشنز، پروڈکٹ ڈیولپمنٹ اور مصنوعات کی مینجمنٹ کے شعبوں میں شاندار تجربہ کا مظاہرہ کر چکے ہیں ۔

این سی سی پی ایل میں بطور چیف آپریٹنگ آفیسر کے پاکستان کی کیپٹل مارکیٹ کی ترقی میں مرکزی اور مددگار کردار ادا کیا اور اس سلسلے میں مختلف اقسام کی پر وڈکٹس اور خدمات کا نفاذ کیا مثلاً کیپیٹل گین ٹیکس کے نظام کے تعمیر نو، یونیک آئیڈینٹیفیکیشن (انفرادی شناختی ) نمبر (یو آئی این)، اداروں کا رسک مینجمنٹ کا نظام، مارجن ٹریڈنگ کا نظام، مارجن فائنانسنگ کا نظام، سیکیورٹیز لینڈنگ اور بورووئنگ کا ، یو آئی این معلومات کا نظام اور بہت کچھ۔

آپ وقتاً فوقتاً اسٹاک ایکسچنج اور سیکیوریٹیز اینڈ ایکسچینجز کمیشن آف پاکستان کی متعددتشکیل کردہ کمیٹیوں میں بھی خدمات انجام دے چکے ہیں

جناب اکبر نے کیپیٹل مارکیٹ آپریشنز کے شعبے میں ، یو ایس سیکیوریٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن اوربمبئی اسٹاک ایکسچینج ،انڈیا سے تربیت بھی حاصل کی ہے ۔اسکے علاوہ آپ یو ۔کے ، یورپ ، مشرق بعید کے ممالک میں رسک مینجمنٹ ، کلئیرنگ اینڈ سیٹلمنٹ اور سرویلینس آف کیپٹل مارکیٹ آپریشنز ،کی متعدد اجلاس اور سیمینارز میں بھی شریک ہو چکے ہیں ۔

عبدلصمد

ہیڈ آف دی ٹرسٹی اینڈ کسٹوڈیل سروسز یونٹ اا اینڈ شئیر رجسٹرار سروسز

عبدالصمد صاحب نے 1996نے میں سی ڈی سی کےآپریشنز ڈپارٹمنٹ میں شمولیت اختیار کی اور وہ اس ٹیم کے خاص رکن تھے جس نے سینٹرل ڈپازٹری سسٹم کا آغاز کیا تھا ۔

2005 میں ان کا تقرر بطور ہیڈ آف آپریشنز ہوا اور پھر آپ 2008 میں ہیڈ آف شیئر رجسٹرار سروسز کے عہدہ پر فائض ہوئے ۔ اس وقت آپ ہیڈ آف ٹرسٹی اینڈ کسٹوڈیل سروسز یونٹ 2 اور شیئر رجسٹرار سروسز ہیں۔

آپ نے 1991 میں کراچی یونیورسٹی سے بیچلر آف کامرس کی ڈگری (سند) حاصل کی ۔انہوں نے انسٹیٹیوٹ آف چارٹرڈ اکاونٹنٹس آف پاکستان(آئی سی اے پی ) سے چارٹرڈ اکاونٹنٹ کی تعلیم حاصل کی اور نومبر 1997 میں (آئی سی اے پی ) میں ساتھی رکن کی حیثیت سے داخل ہوئے۔

حماد علی فیصل

چیف انٹرنل آڈیٹر

جناب حماد علی فیصل2006 ء سے انسٹیٹیوٹ آف چارٹرڈ اکاونٹنٹس آف پاکستان کے رکن ہیں ۔آپ نے اپنے پیشہ وارانہ سفر کا آغاز اے ایف فرگوسن اینڈ کو چارٹر اکاونٹنٹس (پی ڈبلیو سی نیٹ ورک کی ایک ممبر فرم ) سے ایک ٹرینی(زیرِ تربیت) کی حیثیت سے کیا یہاں سے ہی آپ نے اپنی لازمی تربیتی مدت پوری کی اور ڈیڑھ سال تک بطور مینجر ٹیکسیشن خدمات سرانجام دیں ۔ اپنے اے ایف فرگوسن میں قیام کے دوران ، پی ڈبلیو سی کےمختلف مراکز پر تعینات رہے جن میں کوالالمپور ، ملائیشیا کا دفتر بھی شامل ہے۔ جناب فیصل نےسینٹرل ڈیپازٹری کمپنی آف پاکستان لمیٹڈ میں شمولیت سے قبل پاکستان کیبلز لمیٹڈ میں مینیجر اکاؤنٹس کے طور پر خدمات انجام دیں۔ جناب فیصل 2008 ء میں سی ڈی سی میں بطور مینیجر انٹرنل آڈٹ شامل ہوئے اور تین سال تک خدمات انجام دینے کے بعد آپریشنز اینڈ کسٹمر سپورٹ سروسز کےسربراہ کے عہدے پر ترقی پائی ۔21ستمبر 2015 سےآپ کو چیف انٹرنل آڈیٹر کی ذمہ داریاں سونپی گئیں ہیں ۔